عالمی ادب

فصیل پر چبوترے کی دیوار کے ساتھ ٹیک لگائے مہر بند ہونٹوں کے ساتھ ژانین اپنے سامن…

فصیل پر چبوترے کی دیوار کے ساتھ ٹیک لگائے مہر بند ہونٹوں کے ساتھ ژانین اپنے سامنے اس عظیم منظر سے نگاہیں ہٹا نہ پا رہی تھی۔ اس کے پہلو میں کھڑا مارسیل بے چین ہو رہا تھا۔ اسے ٹھنڈ لگ رہی تھی اور وہ واپس نیچے ہوٹل جانا چاہ رہا تھا۔ آخر یہاں دیکھنے کو موجود ہی کیا تھا ؟ لیکن ژانین کی نگاہیں افق سے چپکی تھیں۔ جنوب کی جانب جہاں آسمان اور زمین ایک باریک لکیر میں مل رہے تھے، وہاں سے بھی آگے اسے یوں لگا جیسے کوئی چیز اس کا انتظار کر رہی ہو۔۔۔ کوئی چیز جو اگرچہ ہمیشہ سے اس کی زندگی سے مفقود تھی لیکن اسے…

More


بشکریہ
https://www.facebook.com/groups/1876886402541884/permalink/3621997208030786

متعلقہ تحاریر

جواب دیں

Back to top button
تفکر ڈاٹ کام
situs judi online terpercaya idn poker AgenCuan merupakan salah satu situs slot gacor uang asli yang menggunakan deposit via ovo 10 ribu, untuk link daftar bisa klik http://faculty.washington.edu/sburden/avm/slot-dana/