عالمی ادب

جہاں تک ہوسکے شاعر: کانسٹنٹائن پیٹر کوافی ، مصر…

جہاں تک ہوسکے
شاعر: کانسٹنٹائن پیٹر کوافی ، مصر
مترجم : جاوید شاہین (لاہور)

اگر تم زندگی
اپنی مرضی سے گزار نہیں سکتے
تو جہاں تک ہوسکے
ایسا کرنے کی کوشش کرتے رہو
اس کے ساتھ کھینچا تانی مت کرو
دنیا سے زیادہ تعلقات قائم کرکے
زیادہ مصروف ظاہر کرکے،
اس کی توہین مت کرو
اسے روز مرہ کی حماقتوں میں
سماجی رکھ رکھاؤ اور دعوتوں میں
ننگا مت کرو
ایسا نہ ہو کہ یہ ایک بیزار چیز بن جائے

* * * * *

پیٹر کوافی (Constantine P. Cavafy) ، ۲۹ اپریل ۱۸۶۳ ء کو اسکندریہ ، مصر میں پیدا ہوا۔ زیادہ شاعری یونانی زبان میں کی۔ یونان آتا جاتا رہتا تھا۔ بطور شاعر اس کو شہرت اپنی زندگی میں نہیں مل سکی۔مگر اس کی موت کے بعد اب اسے گزشتہ صدی کا سب سے زیادہ منفرد اور بااثر یونانی شاعر تسلیم کیا جاتا ہے۔ ۲۹ اپریل ۱۹۳۳ء میں اسکندریہ، مصر میں ہی وفات ہوئی۔

مشمولہ : سہ پہر کی دھوپ، مترجم: جاوید شاہین، فکشن ھاؤس، لاہور
انتخاب : ثمینہ جاوید ملک (راولپنڈی)


بشکریہ
https://www.facebook.com/groups/1876886402541884/permalink/2820261388204376

متعلقہ تحاریر

جواب دیں

Back to top button
تفکر ڈاٹ کام
situs judi online terpercaya idn poker AgenCuan merupakan salah satu situs slot gacor uang asli yang menggunakan deposit via ovo 10 ribu, untuk link daftar bisa klik http://faculty.washington.edu/sburden/avm/slot-dana/