عکسِ خیال

”فیض کے خطُوط ایلس کے نام“ ایلس کیتھرین جارج ایک …


”فیض کے خطُوط ایلس کے نام“

ایلس کیتھرین جارج ایک روشن خیال خاتون تھیں اُن کی بڑی بہن کی شادی ڈاکٹر تاثیر سے ھُوئی تھی جو اُن دِنوں امرتسر کے ایم اے او کالج میں پرنسپل تھے۔ وھیں امرتسر میں ڈاکٹر تاثیر کے یہاں پہلے بچے کی ولادت ھوئی تو مسز تاثیر کی چھوٹی بہن ایلس اپنی بہن اور بہنوئی سے ملنے ھندوستان آئی ھوئی تھیں۔ یہیں ایلس جارج کی ملاقات فیض صاحب سے ھوئی۔

اس موضوع پر اظہار خیال کرتے ھُوئے فیض صاحب نے کہا ، ”بھئی یہ کوئی ایسے ھی لو آن فرسٹ سائٹ کا معاملہ نہیں تھا مگر ایک طرح سے یہ لو میرج ھی تھی۔ یعنی ھم کسی خاتون سے شادی کرنا چاھیں اور ھمارے خاندان والے نہ چاھیں تو یہ بالکل لو میرج تھی“۔

گھر والے قائل ھو گئے تھے کہ شادی آپ کو کرنا ھے نہ کہ خاندان والوں کو۔ پھر جب ایلس کو دلہن بنانے کا وقت آیا تو وہ اَڑ گئیں۔ ایلس نے خم ٹھونک کر کہا کہ میں سب کچھ کر گزروں گی مگر برقعہ نہیں پہنوں گی بالآخر ایک خوشگوار سمجھوتہ ھو گیا۔

ایلس کا اسلامی نام کلثوم رکھا گیا اور فیض صاحب اور ایلس کا نکاح شیرِ کشمیر شیخ محمد عبداللہ نے ٢٨ اکتوبر١٩٤١ء کو سری نگر میں پڑھایا زندگی کا یہ بہت اھم فیصلہ تھا جو انہوں نے اُس زمانے میں کیا اور جس کے اثرات ان کی زندگی پر بڑے دور رَس پڑے۔

بعد کے زمانوں میں خصوصاً قید و بند کے زمانے میں جس طرح ایلس نے بچیوں کی تعلیم و تربیت اور پرورش کی وہ شاید کسی اور کے بس کا کام نہ تھا۔ فیض صاحب کے یہاں ایلس کے بطن سے دو بیٹیاں پیدا ھُوئیں۔ سب سے بڑی بیٹی سلیمہ ١٩٤٣ء میں دلی میں پیدا ھُوئیں جبکہ دوسری بیٹی منیزہ اس کے دو سال بعد ١٩٤٥ء میں شِملہ میں پیدا ھوئیں۔

فیض صاحب کو اپنی دونوں بچیوں سے بہت پیار تھا خصوصاً جیل کے زمانوں میں لکھے گئے خطوط میں اُن کی چھوٹی چھوٹی باتوں کو بھی انہوں نے یاد کیا۔ اُنہیں ھمیشہ یہ دُکھ رھا کہ بہت عرصہ تک جیل میں یا کسی اور وجہ سے اُن سے دُور ھونے کی بنا پر اُن کے بچپنے کو وہ اپنی آنکھوں سے نہ دیکھ سکے۔

آئیں ضیا محی الدین سے فیض کے چند خطوط سے اقتباسات سنیں۔

بشکریہ
https://www.facebook.com/Inside.the.coffee.house

متعلقہ تحاریر

جواب دیں

Back to top button
تفکر ڈاٹ کام
situs judi online terpercaya idn poker AgenCuan merupakan salah satu situs slot gacor uang asli yang menggunakan deposit via ovo 10 ribu, untuk link daftar bisa klik http://faculty.washington.edu/sburden/avm/slot-dana/