عکسِ خیال

پیش کرتی ھے ، عجب حُسن کا معیار غزل لے اُڑی ھے تیر…

پیش کرتی ھے ، عجب حُسن کا معیار غزل
لے اُڑی ھے تیرا لہجہ ، تیری گُفتار غزل

دو دھڑکتے ھُوئے دل ، یوں دھڑک اُٹھّے ایک ساتھ
جیسے مِل جُل کے ، بنا دیتے ھیں اشعار غزل

کوئی شیریں سخن آیا بھی ، گیا بھی لیکن
گنگناتے ھیں ابھی تک در و دیوار غزل

میں تو آیا تھا یہاں ، چَین کی سانسیں لینے
چھیڑ دی کس نے سرِ دامنِ کہسار غزل؟؟

مریمِ شعر پہ ھیں ، اھلِ ھوس کی نظریں
فتنۂ وقت سے ھے ، بر سرِ پیکار غزل

گھر کے بھیدی نے تو ، ڈھائی ھے قیامت شبنم
کر گئی ھے مجھے رُسوا سرِ بازار غزل

"شبنم رُومانی”


بشکریہ
https://www.facebook.com/Inside.the.coffee.house

متعلقہ تحاریر

جواب دیں

Back to top button
تفکر ڈاٹ کام
situs judi online terpercaya idn poker AgenCuan merupakan salah satu situs slot gacor uang asli yang menggunakan deposit via ovo 10 ribu, untuk link daftar bisa klik http://faculty.washington.edu/sburden/avm/slot-dana/