جب نیئر مسعود نے شاہد حمید کو خط لکھا۔ 15 مارچ 19…

[ad_1] جب نیئر مسعود نے شاہد حمید کو خط لکھا۔

15 مارچ 1995ء
برادرم شاہد حمید صاحب
السلام علیکم!
اجمل کمال نے ’’جنگ اور امن‘‘ کی دو جلدیں بھیج دیں۔ جس طرح کسی عظیم الشان عمارت کو دیکھ کر کچھ خوف بھی محسوس ہوتا ہے اسی طرح آپ کے اس کارنامے کو دیکھ کر محسوس ہوا۔ جس ناول کو پڑھنے کی میری ہمت نہیں پڑتی تھی آپ نے اس کا ترجمہ کر دکھایا، اور ترجمہ بھی کیسا عمدہ! میری انگریزی دانی معمولی سے بھی کچھ کم ہے، پڑھنے کی رفتار بھی اردو کے مقابلے میں بہت سست ہے۔ اس لیے امید نہیں تھی کہ ’’جنگ اور امن‘‘ کبھی مکمل پڑھ سکوں گا۔ اب آپ کی بدولت پڑھ سکوں گا۔ بلکہ پڑھنے کی شروعات بھی کر دی ہے۔
محمد سلیم الرحمٰن صاحب سے اس ترجمے کی خبر ملی تھی۔ انھوں نے یہ بھی لکھا تھا کہ یہ کام آپ نے محض اپنے شوق سے کیا ہے اور کتاب چھپ جانے کے سوا آپ کو اس کا کوئی معاوضہ نہیں ملا۔ یہ بڑی افسوسناک صورتحال ہے۔ ناشر حضرات کتاب پر بڑی سے بڑی رقم خرچ کر دیتے ہیں۔ کاتبوں، پریس والوں اور جلد سازوں کو پورا معاوضہ دیتے ہیں لیکن لکھنے والوں سے حتی الامکان ادب کی مفت خدمت کرانا چاہتے ہیں۔ امریکا میں محمد حسین آزاد کی ’’آب حیات‘‘ کا انگریزی میں ترجمہ ہو رہا ہے۔ شمس الرحمن فاروقی صاحب کو ترجمے کی نظرثانی کا کام سونپا گیا ہے جس کے لیے فاروقی صاحب ڈیڑھ ڈیڑھ مہینے کے لیے چار بار امریکا جائیں گے (ایک بار جا چکے ہیں)۔ امریکا کے چار سفر، وہاں چھ ماہ قیام کا صرف، پھر نظرثانی کا معاوضہ، اور اس سے کہیں زیادہ اصل مترجم کا معاوضہ، اسی طرح کسی مغربی ادارے کی طرف سے امیر خسرو کی ’’اعجاز خسروی‘‘ کا ترجمہ ہندوستان میں فارسی کے پندرہ سولہ عالموں سے کرایا گیا ہے۔ ہر مترجم کو بہت معقول معاوضے کے علاوہ ایک ایک باتنخواہ مددگار بھی دیا گیا۔ ان لوگوں کو بتایا جائے کہ ہمارے یہاں ’’جنگ اور امن‘‘ کا ترجمہ بلا معاوضہ ہوتا ہے تو کس قدر حیران ہوں گے؟
طالسطائی کی ’’آننا کریننا‘‘ اور متعدد دوسری کہانیوں کے اردو ترجمے روس سے شائع ہوئے ہیں، لیکن وہ اتنے رواں اور واضح نہیں ہیں جتنا آپ کا ترجمہ ہے۔ اس عظیم الشان کام پر دلی مبارکباد قبول کیجئے۔
آپکا…
نیر مسعود
……….

نیرمسعود کا خط موصول ہونے پر شاہد حمید نے آٹھ مئی 1995ء کو جوابی خط میں لکھا:

’’رہا معاوضہ یہ مسئلہ میرا ہی نہیں، برصغیر کے چوٹی کے ادیبوں کو بھی اس سے دوچار ہونا پڑا ہے۔ (محمد حسین آزاد کو اپنی بے مثال تحریروں پر کیا ملا ہو گا؟) دراصل قصور اتنا ناشرین کا نہیں جتنا نظام کا ہے۔ انڈیا میں تو پھر بھی بڑے بڑے پبلشنگ ہاؤس (ملکی اور غیر ملکی موجود ہیں۔ یہاں بڑے طباعتی ادارے، جو ایک دو ہیں۔ ان کی دل چسپیاں کچھ اور ہیں۔ چھوٹے چھوٹے بے بضاعت ناشرین ہیں، ننگی نہائے گی کیا اور نچوڑے گی کیا۔ چار پانچ سو کتاب چھاپ کر خود کیا کھائے گا اور مصنف کو کیا کھلائے گا۔ نزلہ ہمیشہ اسی پر گرتا ہے جو Receiving end پر ہوتا ہے۔ چناں چہ مصنف اکثر اپنے حق سے محروم رہتا ہے بلکہ بعض اوقات اسے کتاب کی طباعت کا بار بھی اٹھانا پڑتا ہے۔
میں نے جب بھی کوئی چھوٹا موٹا کام کیا، کبھی صلے کی توقع پر نہیں کیا۔ جب میں نے ’’وار اینڈ پیس‘‘ کا ترجمہ شروع کیا (میں نے یہ کام کیوں کیا، میرے پاس اس کی کوئی معقول توجیہہ نہیں۔ بس یوں سمجھیں کہ ایک قسم کا Obsession تھا)، مجھے معلوم تھا کہ مالی منفعت تو دور کی بات ہے، الٹا متعلقہ کتابیں اور دوسرا مواد اکٹھا کرنے کے لیے اپنی گرہ سے خرچ کرنا پڑے گا۔ اس کے علاوہ ایک مسئلہ اور بھی تھا، اور وہ تھا ترجمے کو چھاپنے کا۔ جس ناشر سے بھی بات کی اس نے کانوں کو ہاتھ لگایا، ’’ناں بابا، ناں۔ اتنی ضخیم کتاب اور وہ بھی ترجمہ (ترجمہ اس ملک میں گھٹیا کام سمجھا جاتا ہے)، ہم اپنا روپیہ ڈبو نہیں سکتے‘‘۔ میرے پبلشر کے حق میں یہ بات جاتی ہے کہ اس نے درسی کتابوں کے ناشر ہونے کے باوجود اسے چھاپنے کی ہامی بھری (اگر کتاب بک گئی تو شاید… کچھ نہ کچھ معاوضہ بھی دے ہی دے گا…) لیکن اس شرط پر کہ طباعت کی ساری ذمہ داری مجھے ہی اٹھانا ہوگی۔ چناں چہ کمپوزر کے پیچھے میں ہی بھاگتا رہا۔ پروف بھی خود ہی (چار مرتبہ) پڑھتا رہا، اپنی نگرانی میں غلطیاں درست کراتا رہا اور آخر میں پریس کے بھی چکر کاٹتا رہا اور ملا کیا؟ باذوق اور باعلم اصحاب کی تحسین۔ اور میں سمجھتا ہوں کہ میرے لیے یہی کافی ہے۔’‘
……………
بشکریہ صفی سرحدی
بشکریہ

جب نیئر مسعود نے شاہد حمید کو خط لکھا۔15 مارچ 1995ءبرادرم شاہد حمید صاحبالسلام علیکم!اجمل کمال نے ’’جنگ اور امن‘‘ ک…

Posted by Bilal Hussain on Thursday, February 1, 2018

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

جواب چھوڑیں

Hey there!

Forgot password?

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…

Situs sbobet resmi terpercaya. Daftar situs slot online gacor resmi terbaik. Agen situs judi bola resmi terpercaya. Situs idn poker online resmi. Agen situs idn poker online resmi terpercaya. Situs idn poker terpercaya.

situs idn poker terbesar di Indonesia.

List website idn poker terbaik.

Situs slot terbaru terpercaya

Bergabung di Probola situs judi bola terbesar dengan pasaran terlengkap bergabunglah bersama juarabola situs judi bola resmi dan terpercaya hanya di idn poker terpercaya 2022 daftar sekarng di agen situs slot online paling baik se indonesia
trading binomo bersama https://binomologin.co.id/ daftar dan login di web asli binomo