شب تاب . تھاپ پر تھاپ پڑی، سازِ طرب پر ساقی تا بہ …

[ad_1] شب تاب
.
تھاپ پر تھاپ پڑی، سازِ طرب پر ساقی
تا بہ تہہ گنبدِ افلاک گمک جاتی ہے
چنگ سے اُٹھتی ہے جھنکار برابر ساقی
تیرگی رات کی رہ رہ کے کھنک جاتی ہے
.
آتی ہیں مدبھرے سنگیت کی لپٹیں ساقی
آگ آکاش کے سینے میں وہ دہکاتی ہوئی
انگلیاں ساز کے پردوں پہ رواں ہیں ساقی
اس جواں رات کے دل کی کسک اُکساتی ہوئی
.
پھول جھڑتے ہیں سرِ فرش برابر ساقی
ساز کی آنچ پہ رخشندہ شراروں کا گماں
گرمیِ رقص ہے دہکے ہوئے پیکر ساقی
وہ پسینے کی جھلک دیتی ہوئی کاہکشاں
.
رقص شبِ تاب سے ہر عضو درخشاں ساقی
برقِ سیّال چمکتی ہوئی شریانوں میں
جیسے یکبارگی ہو جائے چراغاں ساقی
جسم رنگیں کے لہکتے شبستانوں میں
.
رقص میں پیکرِ رنگیں کا لچکتا ساقی
انگ کے لوچ میں کل راگنیاں جھومتی ہیں
یہ مدھر بول یہ کوندوں کا لہکتا ساقی
لالہ گوں ہونٹوں کو نغموں کی لویں چومتی ہیں
.
جلوہ گر رُوپ میں ہے نور کا تڑکا ساقی
کنول اُن نازنیں ہاتھوں کے لٹاتے ہوئے جس
جیسے دو چاندوں سے امرت کی ہو برکھا ساقی
رقصِ شب تاب وہ چھلکاتا ہوا جوبن رَس
.
رس میں ڈوبی ہوئی آواز کی سرگم ساقی
سات رنگوں کی سجل قوس یہ بانہوں کی دھنک
یہ کھنکتی ہوئی پائل کی چھماچھم ساقی
رُخِ گلرنگ پہ سنگیت کی یہ نرم دمک
.
شعلے جب رات کے سنگیت کو لو دیتے ہیں
جگمگا اُٹھی ہے پیشانیِ دوراں ساقی
نغمے جب زیرِ فلک کانپ کے دَم لیتے ہیں
جھلملا اُٹھتا ہے تاروں کا چراغاں ساقی
.
جام اُچھلتے ہی چھلک جاتی ہیں سرشار فضائیں
شعلے آواز کے سانچوں میں یہاں ڈھلتے ہیں
آنکھیں جھپکاتی ہیں رہ رہ کے غم آلودہ ہوائیں
انگلیوں کے وہ اشارے کہ کنول جلتے ہیں
.
یہ شب افروز نواؤں کی چمک اے ساقی
زندگی اپنی جوانی پہ خود اِتراتی ہوئی
رقص کے شعلوں میں چہروں کی دمک اے ساقی
جیسے آئینہ در آئینہ بہار آتی ہوئی
.
موہنی رُوپ کے سنگیت کا جادو ساقی
آئینہ زیر و بم رقص کا ہر عضو بدن
دلِ بیتاب بدلتے ہوئے پہلو ساقی
دیکھیں اب پڑتی ہے کس پر نگہ صاعقہ زن
.
گت میں اندازِ جہاں گزراں ہے ساقی
سر کے پردوں سے کوئی دردِ نہاں اُٹھتا ہے
بزم میں عود کی موجوں کا سماں ہے ساقی
صاف لہرے سے سرنگی کے دھُواں اُٹھتا ہے
.
رین سنگیت کے اب بھیگ چلے ہیں شعلے
سرنگوں ساز، گلے نور کے خم ہیں ساقی
تیرگی اُنگلیاں چٹخاتی ہے گیسو کھولے
برقِ آواز کی پلکیں بھی تو نم ہیں ساقی
.
رات لیتی ہے جماہی پہ جماہی ساقی
ہر نظر جاگے ہوئے تاروں کی السائی ہوئی
چور کتنی ہے تری نیم نگاہی ساقی
حد میں ڈوبے ہوئے سنگیت کو نیند آئی ہوئی
.
فراق گورکھپوری
[ad_2]

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

جواب چھوڑیں

Hey there!

Forgot password?

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…

Situs sbobet resmi terpercaya. Daftar situs slot online gacor resmi terbaik. Agen situs judi bola resmi terpercaya. Situs idn poker online resmi. Agen situs idn poker online resmi terpercaya. Situs idn poker terpercaya.

situs idn poker terbesar di Indonesia.

List website idn poker terbaik.

Situs slot terbaru terpercaya

Bergabung di Probola situs judi bola terbesar dengan pasaran terlengkap bergabunglah bersama juarabola situs judi bola resmi dan terpercaya hanya di idn poker terpercaya 2022 daftar sekarng di agen situs slot online paling baik se indonesia
trading binomo bersama https://binomologin.co.id/ daftar dan login di web asli binomo