ساحر لدھیانوی تنگ آچکے ہیں کشمکش زندگی سے ہم ٹھکرا…

[ad_1] ساحر لدھیانوی
تنگ آچکے ہیں کشمکش زندگی سے ہم
ٹھکرا نہ دیں جہاں کو کہیں بے دلی سے ہم
مایوسی مآل محبت نہ پوچھئے
اپنوں سے پیش آئے ہیں بیگانگی سے ہم
لو آج ہم نے توڑ دیا رشتۂ امید
لو اب کبھی گلہ نہ کریں گے کسی سے ہم
ابھریں گے ایک بار ابھی دل کے ولولے
گو دب گئے ہیں بارِ غم زندگی سے ہم
گر زندگی میں مل گئے پھر اتفاق سے
پوچھیں گے اپنا حال تری بے بسی سے ہم
اللہ رے قریب مشیت کہ آج تک
دنیا کے ظلم سہتے رہے خامشی سے ہم
……..
بسمل سعیدی
کب سے الجھ رہے ہیں دم واپسیں سے ہم
دو اشک پونچھنے کو تری آستیں سے ہم
ہوگا تمہارا نام ہی عنوان ہر ورق
اوراق زندگی کو الٹ دیں کہیں سے ہم
سنگ در عدو پہ ہماری جبیں نہیں
یہ سجدے کر رہے ہیں تمہاری جبیں سے ہم
دہرائی جا سکے گی نہ اب داستان عشق
کچھ وہ کہیں سے بھول گئے ہیں کہیں سے ہم
بسملؔ حریم حسن میں ہیں کامیاب شوق
جوش شباب و رنگ رخ آتشیں سے ہم
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
صبا اکبر آبادی
کب تک نجات پائیں گے وہم و یقیں سے ہم
اُلجھے ہُوئے ہیں آج بھی دُنیا و دِیں سے ہم
یُوں بیٹھتے ہیں بزم میں خلوت گزِیں سے ہم
لے جائیں اپنے اشک بھی چُن کر زمِیں سے ہم
ہر روز اُن کے نام کے سَو پُھول کِھلتے ہیں
چُن کر قَفس میں لائے ہیں کلیاں کہیں سے ہم
جب تک تمھارے قدموں کی آہٹ نہیں سُنیں!
معلُوم اِس مکاں میں ، نہ ہوں گے مکِیں سے ہم
منظر، الگ الگ مِلے یہ اور بات ہے!
ورنہ جہاں سے خضر چلے تھے، وہِیں سے ہم
اِک روز چِھین لے گی ہَمِیں سے زمِیں ہَمَیں
چِھینیں گے کیا ، زمِیں کے خزانے زمِیں سے ہم
سونے دو اب، کہ صُبحِ قیامت قریب ہے !
کل، پِھر کہیں گے قصۂ ہستی، یہیں سے ہم
ہاتھوں میں اپنے، ہاتھ ہمارے لئے رہو
دُنیا کے بعد اُلجھ نہ پڑیں، آج دِیں سے ہم
حُسنِ طَلَب میں خُود کو صَبا کھو چُکے ہیں جب !
اچّھا تو کیوں نہ مانگ لیں خود کو تمھیں سے ہم
اُن کو سلام کرتے ہیں عُذرِ حَسِیں سے ہم
جیسے، پسِینہ پونچھ رہے ہوں جَبِیں سے ہم
مِل جُل کے داستانِ محبّت تمام ہو
یعنی !کہِیں سے آپ کہیں، اور کہِیں سے ہم
جب تک اجَل نہ صُلح کا پیغام لائے گی
رُوٹھی رہے گی ہم سے زمِیں، اور زمِیں سے ہم
ہم بے خبر ہیں اور وہ اِتنے قرِیب ہیں
دِل سے جواب آئے پُکاریں کہِیں سے ہم
خواہش یہ ہے کہ راہِ محبّت پہ ڈال دیں
کوئی شکن چُرا کے کسی کی جَبِیں سے ہم
جب کارواں لُٹا ہے تو رہبر بھی ساتھ تھا
لُوٹا ہے کِس نے،کہہ نہیں سکتے یقیں سے ہم
دِل سے، بیانِ جلوہ ہے ،دیکھو تو سادگی !
ساحِل کا ذکر کرتے ہیں، کِس تہہ نَشِیں سے ہم
دیکھیں خُمارِ عِشق میں ،ہو کیسی خوشی نَصِیب
سرشار ہیں کسی غَمِ کیف آفرِیں سے ہم
اِک آخری سلام ، اُنھیں کرکے سو گئے
یہ کام لے سکے نِگہِ واپسیں سے ہم
کب تک، یقینِ عِشق ہَمَیں خود نہ آئے گا
کب تک، مکاں کا حال کہیں گے مکِیں سے ہم
اِک جبر لالہ زار کا، آنکھوں میں ہے صَباؔ
دیکھا کئے ہیں خُون اُبلتا زمیں سے ہم
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
بشکریہ ایس ایم حسین


[ad_2]

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

جواب چھوڑیں

Hey there!

Forgot password?

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…

Situs sbobet resmi terpercaya. Daftar situs slot online gacor resmi terbaik. Agen situs judi bola resmi terpercaya. Situs idn poker online resmi. Agen situs idn poker online resmi terpercaya. Situs idn poker terpercaya.

situs idn poker terbesar di Indonesia.

List website idn poker terbaik.

Situs slot terbaru terpercaya

slot hoki terpercaya

Bergabung di Probola situs judi bola terbesar dengan pasaran terlengkap bergabunglah bersama juarabola situs judi bola resmi dan terpercaya hanya di idn poker terpercaya 2022 daftar sekarng di agen situs slot online paling baik se indonesia
trading binomo bersama https://binomologin.co.id/ daftar dan login di web asli binomo