اختر شیرانی – نوشاد علی – حکیم ناصر ………… ن…

[ad_1] اختر شیرانی – نوشاد علی – حکیم ناصر
…………
نوشاد علی
آگ اک اور لگا دیں گے ہمارے آنسو
نکلے آنکھوں سے اگر دل کے سہارے آنسو
حاصل خون جگر دل کے ہیں پارے آنسو
بے بہا لعل و گہر ہیں یہ ہمارے آنسو
ہے کوئی اب جو لگی دل کی بجھائے میری
ہجر میں روکے گنوا بیٹھا ہوں سارے آنسو
اس مسیحا کی جو فرقت میں ہوں رویا شب بھر
بن گئے چرخ چہارم کے ستارے آنسو
خون دل خون جگر بہہ گیا پانی ہو کر
کچھ نہ کام آئے محبت میں ہمارے آنسو
مجھ کو سونے نہ دیا اشک فشانی نے مری
رات بھر گنتے رہے چرخ کے تارے آنسو
وہ سنور کر کبھی آئے جو تصور میں مرے
چشم مشتاق نے صدقے میں اتارے آنسو
پاس رسوائی نے چھوڑا نہ سکوں کا دامن
گرتے گرتے رکے آنکھوں کے کنارے آنسو
لطف اب آیا مری اشک فشانی کا حضور
پیاری آنکھوں سے کسی کے بہے پیارے آنسو
میری قسمت میں ہے رونا مجھے رو لینے دو
تم نہ اس طرح بہاؤ مرے پیارے آنسو
ماہ و انجم پہ نہ پھر اپنے کبھی ناز کرے
دیکھ لے چرخ کسی دن جو ہمارے آنسو
یوں ہی طوفاں جو اٹھاتے رہے کچھ دن نوشادؔ
آگ دنیا میں لگا دیں گے ہمارے آنسو
……
حکیم ناصر
ہائے وہ وقت جدائی کے ہمارے آنسو
گر کے دامن پہ بنے تھے جو ستارے آنسو
لعل و گوہر کے خزانے ہیں یہ سارے آنسو
کوئی آنکھوں سے چرا لے نہ تمہارے آنسو
ان کی آنکھوں میں جو آئیں تو ستارے آنسو
میری آنکھوں میں اگر ہوں تو بچارے آنسو
دامن صبر بھی ہاتھوں سے مرے چھوٹ گیا
اب تو آ پہنچے ہیں پلکوں کے کنارے آنسو
آپ للہ مری فکر نہ کیجے ہرگز
آ گئے ہیں یوں ہی بس شوق کے مارے آنسو
دو گھڑی درد نے آنکھوں میں بھی رہنے نہ دیا
ہم تو سمجھے تھے بنیں گے یہ سہارے آنسو
تو تو کہتا تھا نہ روئیں گے کبھی تیرے لیے
آج کیوں آ گئے پلکوں کے کنارے آنسو
آج تک ہم کو قلق ہے اسی رسوائی کا
بہہ گئے تھے جو بچھڑنے پہ ہمارے آنسو
میرے ٹھہرے ہوئے اشکوں کی حقیقت سمجھو
کر رہے ہیں کسی طوفاں کے اشارے آنسو
آج اشکوں پہ مرے تم کو ہنسی آتی ہے
تم تو کہتے تھے کبھی ان کو ستارے آنسو
اس قدر غم بھی نہ دے کچھ نہ رہے پاس مرے
ایسا لگتا ہے کہ بہہ جائیں گے سارے آنسو
دل کے جلنے کا اگر اب بھی یہ انداز رہا
پھر تو بن جائیں گے اک دن یہ شرارے آنسو
تم کو رم جھم کا نظارہ جو لگا ہے اب تک
ہم نے جلتے ہوئے آنکھوں سے گزارے آنسو
میرے ہونٹوں کو تو جنبش بھی نہ ہوگی لیکن
شدت غم سے جو گھبرا کے پکارے آنسو
میری فریاد سنی ہے نہ وہ دل موم ہوا
یوں ہی بہہ بہہ کے مرے آج یہ ہارے آنسو
ان کو ناصرؔ کبھی آنکھوں سے نہ گرنے دینا
میری آنکھوں میں انہیں لگتے ہیں پیارے آنسو
……..
اختر شیرانی
میرے پہلو میں جو بہہ نکلے تمہارے آنسو
بن گئے شام محبت کے ستارے آنسو
دیکھ سکتا ہے بھلا کون یہ پارے آنسو
میری آنکھوں میں نہ آ جائیں تمہارے آنسو
شمع کا عکس جھلکتا ہے جو ہر آنسو میں
بن گئے بھیگی ہوئی رات کے تارے آنسو
مینہ کی بوندوں کی طرح ہو گئے سستے کیوں آج
موتیوں سے کہیں مہنگے تھے تمہارے آنسو
صاف اقرار محبت ہو زباں سے کیوں کر
آنکھ میں آ گئے یوں شرم کے مارے آنسو
ہجر ابھی دور ہے میں پاس ہوں اے جان وفا
کیوں ہوئے جاتے ہیں بے چین تمہارے آنسو
صبح دم دیکھ نہ لے کوئی یہ بھیگا آنچل
میری چغلی کہیں کھا دیں نہ تمہارے آنسو
اپنے دامان و گریباں کو میں کیوں پیش کروں
ہیں مرے عشق کا انعام تمہارے آنسو
دم رخصت ہے قریب اے غم فرقت خوش ہو
کرنے والے ہیں جدائی کے اشارے آنسو
صدقے اس جان محبت کے میں اخترؔ جس کے
رات بھر بہتے رہے شوق کے مارے آنسو
……
بشکریہ میاں مصطفےٰ


[ad_2]

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

جواب چھوڑیں

Hey there!

Forgot password?

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…

Situs sbobet resmi terpercaya. Daftar situs slot online gacor resmi terbaik. Agen situs judi bola resmi terpercaya. Situs idn poker online resmi. Agen situs idn poker online resmi terpercaya. Situs idn poker terpercaya.

situs idn poker terbesar di Indonesia.

List website idn poker terbaik.

Situs slot terbaru terpercaya

slot hoki terpercaya

Bergabung di Probola situs judi bola terbesar dengan pasaran terlengkap bergabunglah bersama juarabola situs judi bola resmi dan terpercaya hanya di idn poker terpercaya 2022 daftar sekarng di agen situs slot online paling baik se indonesia
trading binomo bersama https://binomologin.co.id/ daftar dan login di web asli binomo