#hamidnaved تینوں بچوں کو اسکول اور میاں کو دفتر روانہ کرکے عنبر بوجھل دل کے س…

[ad_1] #hamidnaved

تینوں بچوں کو اسکول اور میاں کو دفتر روانہ کرکے عنبر بوجھل دل کے ساتھ گھر کے کاموں میں مصروف ہوگئی. چھوٹے سے صحن کو دھونے کے بعد وہ باورچی خانے کا رخ کرہی رہی تھی کہ چھوٹے عمار کا کارنامہ دیکھ کے ٹھٹھک کر رہ گئی جو بڑی تندہی سے گملے کی مٹی دھلے ہوۓ فرش پر پھیلا کر خوشی سے پھولے نہیں سما رہے تھے. عنبر نے اپنا سر پیٹ لیا. دو سالہ عمار کو ہاتھ منہ دھلا کر کپڑے بدلواۓ اور مٹی سمیٹ کر گملے میں ڈالی. بچے کے سامنے کھلونے رکھ کر گھڑی کی طرف دیکھتی بڑبڑاتی ہوئی باورچی خانے میں گھسی, صبح کے برتن جلدی جلدی دھوکر چولہے پہ سالن چڑھایا اور دوسری طرف کپڑے دھونے کے لیۓ مشین لگالی ” یہ بھی کوئی زندگی ہے گھن چکروں کی طرح سارا دن کام کرو پتا نہیں کیا جلدی تھی اماں کو شادی کی پھر اوپر تلے چار بچوں کی پیدائش…اپنی زندگی تو رہی ہی نہیں” پچھلے ہفتے اتفاقا ملیحہ سے ہونے والی ملاقات پر عنبر نامحسوس طریقے سے اپنا اور ملیحہ کا موازنہ کرنے لگی تھی.
ملیحہ عنبر کی بچپن کی سہیلی تھی میٹرک تک دونوں نے اکھٹے ہی پڑھا. میٹرک کے بعد عنبر کی شادی ہوگئی اور پھر ملیحہ سے کوئی رابطہ ہی نہ رہا. پچھلے ہفتے ضروری اشیاء کی خریداری کی غرض سے عنبر کا قریبی سپر اسٹور پہ جانا ہوا جہاں کئی سال بعد ملیحہ سے ملاقات ہوئی. پہلی نظر میں تو عنبر پہچان ہی نہ سکی بڑی سی گاڑی سے اترتی خوبصورت لباس میں ملبوس ملیحہ اسے پہلے سے ذیادہ حسین لگی. رسمی باتوں کے بعد فون نمبروں کے تبادلے ہوۓ اور ایک دوسرے کو گھر آنے کی دعوت دی گئی. اس دن سے عنبر کی سوئی ملیحہ پہ ہی اٹکی ہوئی تھی شادی کو تین سال گزرنے کے باوجود ملیحہ کے دبلے پتلے نازک سراپے کو دیکھ کر عنبر کو بےحد رشک آیا. یر شے سے خوشحالی ٹپک رہی تھی. اسی لمحے میاں کی محدود آمدنی کا سوچ کر اکتاہٹ میں مبتلا ہوتی عنبر کو اپنا وجود اور تن پہ موجود عام سا لان کا سوٹ مزید بےوقعت لگا. “ہے کیا میرے پاس یہ چھوٹا سا گھر اور میاں کی عام سی گاڑی ..کسی مہینے اضافی خرچہ ہوجاۓ تو مہینہ پورا کرنا مشکل ہوجاتا ہے.” عنبر جھنجھلاتی ہوئی سوچنے لگی.

اگلی ہی صبح ملیحہ نے اسے فون کرکے اپنے گھر مدعو کیا. عنبر تیار ہوکر میاں اور بچوں کے ساتھ روانہ ہوئی. عنبر کو ملیحہ کے گھر چھوڑ کر اسکے شوہر بچوں کے ہمراہ اپنی والدہ کے ہاں چلے گئے جو وہاں سے قریب ہی تھا. گاڑی سے اتر کر ایک لمحے کے لیۓ تو عنبر پلکیں جھپکانا ہی بھول گئی. شہر کے پوش علاقے میں بنی عالیشان کوٹھی جسکے اطراف میں بنے لان مکینوں کے ذوق کا پتہ دے رہے تھے. ملازمہ عنبر کو ڈرائینگ روم میں بٹھا کر ملیحہ کو بلانے چلی گئی اور عنبر خوبصورتی سے سجے اس ڈرائینگ روم کو رشک بھری نظروں سے دیکھنے لگی اتنے میں ملیحہ کمرے میں داخل ہوئی اور عنبر سے پرتپاک انداز میں ملی. خوشگوار ماحول میں پرانی یادیں تازہ کی گئیں اور ساتھ ہی میز پہ سجے لوازمات سے بھی انصاف کیا گیا. چاۓ سے فارغ ہوکر ملیحہ بتانے لگی کہ اسے اتنی جلدی میں مدعو کرنے کی وجہ کل میرا اپنے شوہر کے ساتھ امریکہ جانا ہے اور واپسی کا بھی معلوم نہیں کہ کب تک ہو لہذا میں نے سوچا کہ تم سے ملاقات کرکے جاؤں, ملیحہ بھیگے لہجےمیں بولی. ملیحہ کی آنکھوں میں نمی دیکھ کر عنبر بےچین ہوگئی. کیا بات ہے ملیحہ سب ٹھیک تو ہے نا¿ عنبر بولی, مگر اگلا انکشاف عنبر کو لرزا دینے کے لیۓ کافی تھا… “دراصل گذشتہ سال سے میں خون کے کینسر جیسی موذی بیماری سے لڑرہی ہوں. ملک کا کوئی بہترین معالج نہیں چھوڑا مگر مرض ہے کہ بڑھتا ہی جارہا ہے. اب ہم نے یہ فیصلہ کیا ہے کہ امریکہ جا کر علاج کروائیں. اس بیماری کے باعث میں ماں بننے سے بھی محروم ہوں” ملیحہ کی آنکھوں سے اشکوں کی برسات ہورہی تھی اور عنبر…. وہ کسی سکتے کی کیفیت میں یک ٹک ملیحہ کو دیکھتی گئی نہ کوئی تسلی نہ دلاسہ. الفاظ جیسے ساتھ ہی چھوڑ گئے… وہ تو ملیحہ کی زندگی کو ایک مکمل اور خوشیوں سے بھرپور زندگی سمجھ رہی تھی..بلکہ یہ تمنا کرنے لگی تھی کہ اسکی بھی زندگی ملیحہ جیسی ہو…. عجیب صدمے کی سی کیفیت تھی.. پتا نہیں دوست کی بیماری کا دکھ ذیادہ تھا یا خود احتسابی کا کرب.. غائب دماغی سے کچھ باتیں کی کچھ باتوں کے جواب دئیے پھر بوجھل دل کے اور من من بھر قدموں کے ساتھ گھر واپس آگئی. دل کی کیفیت بیان سے باہر تھی. ایک طرف ملیحہ کی بیماری کا سن کر دل غمگین تھا دوسری طرف اپنی سوچ پر ندامت… کتنی ناشکری ہوگئی تھی میں .. کیا کیا سوچنے لگی تھی.. اپنا گھر.. پیارے پیارے بچے..محبت کرنے والا ہمسفر…خوبصورت رشتے اور سب سے بڑھ کر صحت… کیا نہیں ہے میرے پاس…. آج اسے صحیح معنوں میں نعمتوں کا ادراک ہورہا تھا. “یا اللہ مجھے معاف فرمادے اور اپنا شکرگزار بنادے” ایک نۓ عزم کے ساتھ وہ اٹھی اور بچوں کے پھیلاۓ ہوۓ کھلونے سمیٹنے لگی”.

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

جواب چھوڑیں

Hey there!

Forgot password?

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…

Situs sbobet resmi terpercaya. Daftar situs slot online gacor resmi terbaik. Agen situs judi bola resmi terpercaya. Situs idn poker online resmi. Agen situs idn poker online resmi terpercaya. Situs idn poker terpercaya.

situs idn poker terbesar di Indonesia.

List website idn poker terbaik.

Situs slot terbaru terpercaya

slot hoki terpercaya

Bergabung di Probola situs judi bola terbesar dengan pasaran terlengkap bergabunglah bersama juarabola situs judi bola resmi dan terpercaya hanya di idn poker terpercaya 2022 daftar sekarng di agen situs slot online paling baik se indonesia
trading binomo bersama https://binomologin.co.id/ daftar dan login di web asli binomo