“جھیل میں کنکر” کے شاعر سلمان باسط کا انٹرویو

“جھیل میں کنکر” کے شاعر سلمان باسط کا انٹرویو

تفکر – آپ کا پورا نام؟

سلمان باسط۔۔سلمان باسط

تفکر – قلمی نام؟

سلمان باسط۔۔سلمان باسط

تفکر – کہاں اور کب پیدا ہوئے؟

سلمان باسط۔۔25 نومبر 1958

تفکر – تعلیمی قابلیت؟

سلمان باسط۔۔ایم اے انگریزی ادبیات

تفکر – ابتدائی تعلیم کہاں سے حاصل کی؟

سلمان باسط۔۔کھاریاں کینٹ

تفکر – اعلی تعلیم کہاں سے حاصل کی؟

سلمان باسط۔۔ایم اے انگریزی زبان و ادب ،گورنمنٹ کالج لاہور

تفکر – پیشہ؟

سلمان باسط۔۔یونیورسٹی پروفیسر

تفکر –ادبی سفر کاآغاز کب ہوا؟

سلمان باسط۔۔ادبی سفر کا آغاز سکول سے ہوا

تفکر – آپ نظم یا غزل میں کس سے متاثر ہوئے؟

سلمان باسط۔۔نظم میں اقبال،فیض،مجیدامجد اور اختر حسین جعفری جب کہ غزل میں میر،غالب،ظفر اقبال،خورشید رضوی اور منیر نیازی نے متاثرکیا

تفکر -کسی شاعر کا تلمذ اختیار کیا؟

سلمان باسط۔۔کسی کا تلمذ اختیار نہیں کیا،میرا شوق اور میرا مطالعہ ہی میرا استاد ہے۔

تفکر – ادب کی کون سی صنف زیادہ پسند ہے؟

سلمان باسط۔۔شاعری میں غزل اور نظم دونوں پسند ہیں۔ نثر میں خاکہ، افسانہ اور خود نوشت سے قربت محسوس کرتا ہوں۔

تفکر – ادب کی کس صنف میں زیادہ کام کیا؟

سلمان باسط۔۔میرا زیادہ کام غزل،نظم، خاکہ اور آپ بیتی میں ہے۔

تفکر – اب تک کتنی تصانیف شائع ہو چکی ہیں؟

سلمان باسط۔۔پہلی شعری تصنیف “جھیل میں کنکر” مطبوعہ 1981۔دوسرا شعری مجموعہ زیرترتیب ہے۔ نثری تصنیف معاصر ادیبوں کے شخصی خاکوں پر مشتمل ہے ۔”خاکی خاکے” مطبوعہ 1999۔ خاکوں کی دوسری کتاب بھی زیرترتیب ہے۔ اخبارات میں “صلائے عام” کے نام سے کالم لکھے۔خود نوشت آپ بیتی” ناسٹیلجیا” زیرترتیب ہے۔

تفکر – اپنے خاندان کے حوالے سے کچھ بتائیں؟

سلمان باسط۔۔ایک علمی اور ادبی خانوادے سے تعلق ہے۔ میرے دادا غلام حیدر مرحوم صاحب دیوان شاعر تھے۔ان کے بھائی میراں بخش منہاس پنجابی زبان کے پہلے ناول نگار تھے۔ان کا ناول “جٹ دی کرتوت” پنجابی ادب میں حوالے کے طور پر جانا جاتا ہے۔ وہ بہت عمدہ شاعر بھی تھے۔ میرے بڑے بھائی عثمان خاور شاعر اور سفر نگار ہیں۔ان کا سفرنامہ”ہریالیوں کے دیس میں” 1996 میں شائع ہوا۔

تفکر – ازدواجی حیثیت؟

سلمان باسط۔۔شادی شدہ

تفکر – فیملی ممبرز کے بارے میں بتائیے؟

سلمان باسط۔۔دو بیٹیاں اور دو بیٹے

تفکر – آج کل کہاں رہائش پذیر ہیں؟

سلمان باسط۔۔آج کل سعودی عرب کے شہر ینبوع میں مقیم ہوں

تفکر – بچپن کی کوئی خوبصورت یاد؟

سلمان باسط۔۔سب بچوں کی طرح میرا بچپن بھی خوبصورت یادوں پر مشتمل ہے۔اس حسین گلدستے میں سے کسی ایک پھول کا انتخاب کرنا مشکل ہے۔اس پھولوں والی گلی کی تمام یادیں میری آپ بیتی “ناسٹیلجیا” میں قارئین کو پڑھنے کو جلد ملیں گی۔

تفکر – ادبی سفر کے دوران میں کوئی خوبصورت واقعہ؟

سلمان باسط۔۔ادبی سفر پر روانہ ہوئے ایک عمر ہونے کو آئی۔بے شمار واقعات ہیں جو فرصت اور تنہائی کے لمحات میں میری آنکھوں میں جھلملاتے رہتے ہیں اور کبھی کبھی کوئی ستارہ پلکوں بھی اٹک جاتا ہے۔واقعات کا ایک سلسلہ ہے مگر کسی ایک کڑی کو الگ کرنا شاید مشکل ہو۔ ایک دلچسپ واقعہ یاد آ رہا ہے۔پچھلے برس جب میں پاکستان گیا تو لاہور کے دوستوں نے میرے لیے جم خانہ کلب میں میرے لیے ایک یادگار نشست کا اہتمام کیا۔آخر میں جب مجھے کلام سنانے کو کہا گيا تو میں نے دوستوں کو مخاطب کرتے ہوئے ہلکے پھلکے انداز میں کہا،” آپ سب کے لیے اچھی خبر یہ ہے کہ میرے پاس کچھ بھی لکھا ہوا موجود نہیں۔” امجد اسلام امجد نے اپنی روایتی بذلہ سنجی کا مظاہرہ کرتے ہوئے فوراہی فقرہ چست کیا ” اور بری خبر یہ ہے کہ سلمان کو اپنا سارا کلام زبانی یاد ہے” اس پر جو قہقہہ گونجا وہ شاید آج بھی جم خانہ کی دیواروں سے کہیں چپکا ہو گا۔

تفکر – ادب میں کن سے متاثر ہیں؟

سلمان باسط۔۔اپنے عہد کے پسندیدہ مصنفین میں دیگر کے علاوہ مختار مسعود مرحوم اور ڈاکٹر خورشید رضوی شامل ہیں۔اساتذہ کی فہرست نسبتاََطویل ہے۔

تفکر – ادبی رسائل سے وابستگی؟

سلمان باسط۔۔کچھ عرصہ پہلے ملکی اخبارات میں “صلائے عام” کے عنوان سے کالم لکھتا رہا۔ ملکی اور غیر ملکی اخبارات او رمعروف جرائد کے مدیران میری تخلیقات شائع کرتے رہتے ہیں اور میں ان کی محبت اور خوش گمانیوں کے لیے ممنون ہوں۔

تفکر – ادبی گروپ بندیوں اور مخالفت کا سامنا ہوا؟

سلمان باسط۔۔میں ادب میں طبقات اور گروہ بندیوں کا قائل ہی نہیں۔جہاں اختلافات دامن تک پہنچنے لگیں میں وہاں ٹھہرنا مناسب نہیں سمجھتا۔ایسی محفلوں اور ایسی نشستوں سے دور رہنا ہی بہتر خیال کرتا ہوں۔اللہ کا کرم ہے کہ ادبی دنیا میں احباب محبت اور عزت دیتے ہیں اور میرے دل میں بھی سبھی کے لیے بہت احترام ہے۔فیس بک پرکچھ دوستوں کے ساتھ مل کر “حرف و صوت” کے نام سے ادبی فورم چلا رہا ہوں جہاں باوقار طریقے سے ادب کی تخلیق، ترویج اور اس پر اس پر شائستہ انداز میں گفتگو ہوتی ہے۔

تفکر – ادب کے حوالے سے حکومتی پالیسی سے مطمئن ہیں؟

سلمان باسط۔۔میں نہیں سمجھتا کہ حکومتوں کی سربراہی ادب کی ترویج میں بہت بڑا یا بہت اہم کردار ادا کر سکتی ہے۔تخلیق کسی سرپرستی یا ستائش کی محتاج نہ ہوتی ہے اور نہ ہونی چاہیے۔ ادب کا زوال ہی تب شروع ہوتا ہے جب ادیب اور شاعر حکومت وقت کی طرف دیکھنا شروع کر دے۔مراعات اور مناصب کے سائے تلے پنپنے والا ادب کبھی بھی اپنا نقش نہیں بنا سکتا۔نان و نمک کی ہوس تخلیق کار کو کبھی راس نہیں آتی۔ لکھنے والے کو ان چیزوں سے بے نیاز رہنا چاہیے۔عمر بھر کسی منصب تک نہ پہنچ سکنے والے میر کو کون مار سکتا ہے؟ مجید امجد کے پاس کون سے عہدے تھے مگر آج مجید امجد کی نظم کا جادو سر چڑھ کر بولتا ہے۔ ہاں یہ ضرور ہے کہ اگر تخلیق کار مفلوک الحال ہو تو حکومت کو آگے آنا چاہیے۔ یوں بھی حکومتیں عمومی طور پر ادب سے نا آشنا ہوتی ہیں۔ان ایوانوں میں بیٹھے لوگ ادبی راہداریوں سے کبھی گزرتے ہی نہیں۔ان سے زیادہ توقعات رکھنا سراب کے پیچھے بھاگنے کے مترادف ہے۔

تفکر – اردو ادب سے وابستہ لوگوں کے لئیے کوئی پیغام؟

سلمان باسط۔۔اردو ادب سے وابستہ لوگوں کو اس خوبصورت زبان کو زندہ اور محفوظ رکھنا ہے اور اس کا بہتر طریقہ یہی ہے کہ اسے ہندی، انگریزی اور کچھ دیگر زبانوں کےالفاظ کے بے مقصد اور بے محل استعمال سے بچائیں۔اس کو شفاف رہنے دیں۔زبانوں کا قدرتی اختلاط اپنی جگہ مگر شعوری کوشش سے ان زبانوں کے الفاظ کی نشست مناسب نہیں۔دوسری بات یہ ہے کہ اردو میں لکھنے والوں کو اپنا مطالعہ بڑھانا چاہیے اور دیگرزبانوں میں لکھے گئے ادب کو پڑھنا چاہیے۔ان کا یہ مطالعہ انہیں وسعت نظر عطا کرے گا۔بس اپنا کام ستائش کی تمنا وار صلے کی پروا کے بغیر کرتے جائیں۔عزت اور ذلت اس کے ہاتھ میں ہے جو سب سے بڑا تخلیق کار ہے۔

تفکر – ہماری اس کاوش پر کچھ کہنا چاہیں گے؟

سلمان باسط۔۔ آپ نے جو سلسلہ شروع کیا ہے، بہت قابل تحسین ہے۔ادب کی ترویج اور ادیب کے اکرام کی بہترین صورت ہے۔ہم عصر ادیبوں کا اعتراف کرنے کےلیے بڑے ظرف کی ضرورت ہوتی ہے اور اپ نے اس کا بھرپور مظاہرہ کیا ہے۔میں آپ کو اس مستحسن اقدام پرمبارکباد پیش کرتا ہوں۔

تفکر – شعر یا تحریر؟

سلمان باسط۔۔میں تو اپنی دانست میں نثر اور شاعری دونوں کو اپنے تعارف کا ذریعہ سمجھتا ہوں اور قادرمطلق کا شکر کہ اس نے مجھے دونوں اصناف میں توقیر عطا کی۔

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

جواب چھوڑیں

Hey there!

Forgot password?

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…

Situs sbobet resmi terpercaya. Daftar situs slot online gacor resmi terbaik. Agen situs judi bola resmi terpercaya. Situs idn poker online resmi. Agen situs idn poker online resmi terpercaya. Situs idn poker terpercaya.

situs idn poker terbesar di Indonesia.

List website idn poker terbaik.

Situs slot terbaru terpercaya

Bergabung di Probola situs judi bola terbesar dengan pasaran terlengkap bergabunglah bersama juarabola situs judi bola resmi dan terpercaya hanya di idn poker terpercaya 2022 daftar sekarng di agen situs slot online paling baik se indonesia
trading binomo bersama https://binomologin.co.id/ daftar dan login di web asli binomo